شہر میں واٹر سپلائی، سیوریج، ٹیوب ویل اور واٹر فلٹریشن پلانٹ لگانے کے بڑے منصوبے پر کام کا آغاز

جس سے شہر کی مستقبل کی 40 سالہ ضروریات پوری ہو سکیں گی۔کمشنر ساہیوال ڈویژن

ساہیوال(نمائندہ بندیا اسحاق)گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق کمشنر ساہیوال ڈویژن نادر چٹھہ نے کہا ہے کہ شہر میں واٹر سپلائی اور سیوریج کی نئی لائنیں بچھانے ،نئے ٹیوب ویل اور واٹر فلٹریشن پلانٹ لگانے کے بڑے منصوبے پر کام کا آغاز کر دیا گیا ہے جس سے شہرکی مستقبل کی 40 سالہ ضروریات پوری ہو سکیں گی ۔ایشیائی ترقیاتی بینک کے مالی تعاون سے شروع ہونے والے اس منصوبے پر لاگت کا کل تخمینہ 18 ارب روپے لگایا گیا ہے ۔انہوں نے یہ بات اپنے دفتر میں سٹی کوارڈنیشن کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی جس میں پاکستان تحریک انصاف کے مقامی رہنماﺅں چوہدری نوریز شکور خاں ،شکیل احمد خان نیازی ،شیخ محمد چوہان ،ڈاکٹر مظہر شیرازی ،نبیلہ خاں اور صدر ساہیوال چیمبر چوہدری عاصم رفیق کے علاوہ سرکاری افسران ایڈیشنل کمشنر کوارڈنیشن شفیق احمد ڈوگر ،ڈائریکٹر ڈیویلپمنٹ احمد خاور شہزاد ،ڈی جی پی ایچ اے محبوب احمد ،ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ اظہر دیوان اور ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل شیخ عابد عنایت کے علاوہ متعلقہ محکموں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی ۔اجلاس میں بتایا گیا کہ 15 کروڑ 40 لاکھ روپے کی لاگت سے مین پارکوں میں تفریحی سہولیات کی فراہمی کا منصوبہ 31 مارچ تک مکمل کر لیا جائے گا جبکہ 2 ارب 5 کروڑ 85 لاکھ روپے سے واٹر سپلائی پراجیکٹ پربھی کام کا آغاز ہو چکا ہے جس میں 45 موجودہ ٹیوب ویلز کی بہتری کے علاوہ 28 نئے ٹیوب ویل بھی لگائے جائیں گے اور شہر کی واٹر سپلائی کی تمام لائنیں تبدیل کی جائیں گی۔ اس کے علاوہ سیوریج کے منصوبے پر بھی کام کا آغاز مارچ میں متوقع ہے جبکہ فتح شیر روڈ کی تعمیر پر کام اپریل میں شروع ہو گا ۔کمشنر ساہیوال نادر چٹھہ نے تمام اداروں کے درمیان باہمی روابط کر بہتر کرنے اور کام کی کوالٹی کو یقینی بنانے کیلئے ایک کمیٹی قائم کرنے اور میٹرو پولٹین کارپوریشن میں کوارڈنیشن آفس قائم کرنے کی بھی ہدایت کی ۔انہوں نے میٹروپولٹین کارپوریشن کی ضروریات کے مطابق مشینری فراہم کرنے اور عملے کو تربیت دینے کی ضرورت پر بھی زور دیا تا کہ مہیا کی جانے والی مشینری سے بہتر فائدہ حاصل کیا جا سکے اور شہر کی صفائی کے کام میں بہتری آئے ۔اجلاس میں عوامی نمائندوں نے منصوبے کو مزید موثر بنانے کیلئے مختلف تجاویز بھی دیں جس پر کمشنر نے یقین دلایا کہ انہیں منصوبے میں شامل کرنے کی بھر پور کوشش کی جائے گی ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: