چیف ٹریفک آفیسر کی سربراہی میں ٹریفک نظام کے حوالے سے جائزہ اجلاس

5

ٹریفک حکام قوانین پر عملدرآمد یقینی بنانے کیلئے تمام تر صلاحیتیں بروئے کار لائیں‘ چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت کا اجلاس سے خطاب

پشاور(نمائندہ خصوصی)گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت کی سربراہی میں ٹریفک نظام کے حوالے سے جائزہ اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس میں ایس پی ہیڈکوارٹرز افتخار علی, ایس پی کینٹ ٹریفک امان اللہ‘ ایس پی سٹی ٹریفک عبداالسلام خالد‘ ڈی ایس پی پیز سمیت ٹریفک آفیسرز اور ٹریفک وارڈنز نے شرکت کی۔ چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت نے گزشتہ ہفتے کی جانیوالی کارروائیوں کا جائزہ لیا اجلاس میں چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت کو تجاوزات مافیا کے خلاف کارروائیوں‘ کالے شیشوں کے استعمال ، اوور لوڈنگ ، نو پارکنگ زون, ہیلمٹ‘ سیٹ بیلٹ‘ ون ویلنگ‘ غیر رجسٹرڈ موٹر سائیکلوں اور دیگر مہمات کے بارے میں بریفنگ دی گئی جس پر چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت نے اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ سٹی ٹریفک پولیس پشاور اسی طرح شہریوں کو بلا تعطل سفری سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے تمام تر صلاحیتیں بروئے کار لائیں اور اس سلسلے میں کسی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائیگی۔ چیف ٹریفک آفیسر نے ڈی ایس پیز کو ہدایت کی کہ وہ اپنے سکٹرز میں کارروائیاں کرنے کے بعد چیک اینڈ بیلنس رکھیں تاکہ پھر تجاوزات مافیا اپنے حدود سے تجاوز نہ کریں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹریفک افسران اور وارڈنز روزانہ کی بنیاد پر تجاوزات مافیا کے خلاف کارروائیوں کا سلسلہ جاری رکھیں تاکہ شہر بھر سے تجاوزات کا خاتمہ ممکن ہو سکے اور شہریوں کو کسی قسم کے مشکلات درپیش نہ ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ تاجر برادری شہر کی خوبصورتی اور تجاوزات کے خاتمے میں سٹی ٹریفک پولیس پشاور کے عملے کے ساتھ تعاون کا سلسلہ جاری رکھیں اور تجاوزات مافیا رضا کارانہ طور پر تجاوزات کا خاتمہ کریں تاکہ آپریشن کے دوران ان کے قیمتی سامان کا ضیاع نہ ہو۔انہوں نے افسران کو ہدایت کی کہ سٹی ٹریفک پولیس پشاور کے زیر اہتمام جاری کردہ مہمات میں مزید تیزی لائی جائے اور ٹریفک قوانین کی خلاف وررزی کرنیوالوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے اور ہدایت کی کہ وہ اس سلسلے میں کسی کے ساتھ کوئی نرمی نہ برتے۔ انہوں نے کہا کہ ٹریفک قوانین پر عملدرآمد اور شہر میں بلا کسی تعطل کے ٹریفک نظام رواں دواں رکھنے میں کسی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائیگی جبکہ کوتاہی برتنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائیگی.

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: