شکاگو:ایران کوغیرقانونی طورپرٹیکنالوجی برآمد کرنے کی کوشش پرایرانی نژاد امریکی گرفتار

شکاگو میں ایرانی نژادامریکی شہری کو ایران کی حکومت کوغیر قانونی طور پر امریکا سے انفارمیشن ٹیکنالوجی برآمد کرنے کی کوشش کے الزام میں گرفتارکرلیا گیا ہے۔

امریکی محکمہ انصاف نے منگل کے روزدُہری شہریت کے حامل اس ایرانی کی گرفتاری کی اطلاع دی ہے۔محکمہ انصاف نے ایک بیان میں کہا کہ 44 سالہ قمبیض عطار کاشانی نے ایران کے مرکزی بنک (سی بی آئی) کوغیر قانونی طور پر اشیاء اور ٹیکنالوجی برآمد کرنے کی سازش کی تھی۔

امریکی حکومت تسلیم کرتی ہے کہ یہ بنک ایرانی حکومت کا ایک ادارہ ہے اور اس پرامریکا کی پابندیاں عاید ہیں۔امریکا نے سی بی آئی پر اس بنیاد پراشیاء اور خدمات کی فروخت پر پابندی عاید کررکھی ہے کہ وہ ایران کی القدس فورس اور لبنان میں ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ ملیشیا سمیت دہشت گرد تنظیموں کے ساتھ تعاون کرتا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ کاشانی نے متعدد امریکی کمپنیوں سے باربار جھوٹ بولا اور ایران کو اشیاء بھیجنے کے اپنے ارادے کو چھپایا ہےاورسی بی آئی اور دیگرایرانی اداروں کے استعمال کے لیے غیرقانونی طورپرانفارمیشن ٹیکنالوجی حاصل کرنے کی اجازت کی کوشش کی ہے۔

بیان کے مطابق امریکا سے غیر قانونی طورپرایران منتقل کی جانے والی ٹیکنالوجی کو دہشت گرد استعمال کرسکتے ہیں۔ ایف بی آئی کے کاؤنٹرانٹیلی جنس ڈویژن کے اسسٹنٹ ڈائریکٹرایلن ای کوہلرجونیر نے اس گرفتار پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’امریکا میں ایران کے مفادات کے لیے کوششیں کرنے والوں کوہمارے قانون نافذ کرنے والے اداروں اور انٹیلی جنس کمیونٹی کے شراکت داروں کے پوری طاقت سے ردعمل کی توقع کرنی چاہیے‘‘۔

imshehzadahmad@

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: