آج ہی کے دن 1979 میں پہلی بار کسی واحد پاکستانی نے نوبل انعام جیتا

49

ڈاکٹر عبدالسلام کو دنیا کی 36 یونیورسٹیوں نے ڈاکٹریٹ کی اعزازی ڈگریاں عطا کی تھیں جبکہ 22 ممالک نے انہیں اپنے اعلیٰ اعزازات سے بھی نوازا تھا۔

معروف پاکستانی ماہر طبیعات ڈاکٹر عبدالسلام ۔ جو نظریہ علم طبیعات کے حوالے سے بیسویں صدی کی اہم شخصیت ہیں۔ پاکستان کے وہ واحد سائنسدان ہیں 1979ء میں جنہیں طبیعات کے شعبے میں خدمات کے اعتراف میں نوبل انعام دیا گیا تھا۔ انہیں یہ انعام دو امریکی سائنسدانوں شیلڈن لی اور سٹیون وینبرگ کےساتھ مشترکہ طور پر دیا گیا۔۔ ان کا نظریہ الیکٹرو ویک تھیوری بعد میں سلام وینبرگ ماڈل کے نام سے جانا گیا۔ اس کی جدید شکل کو آج سٹینڈرڈ ماڈل کا نام دیا جاتا ہے۔
حکومت پاکستان نے انہیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی، ستارہ امتیاز اور نشان امتیاز کے اعزازات عطا کئے تھے۔ 22 ممالک نے اپنے اعلیٰ اعزازات سے بھی نوازا تھا، جن میں اردن کا نشان استقلال، وینزویلا کا نشان اندرے بیلو، اٹلی کا نشان میرٹ، ہاپکنز پرائز، ایڈمز پرائز، میکسویل میڈل، ایٹم پرائز برائے امن، گتھیری میڈل، آئن اسٹائن میڈل اور لومن سوف میڈل سرفہرست ہیں۔
ڈاکٹر عبدالسلام 1960ء سے 1974ء تک حکومت پاکستان کی جانب سے مشیر سائنس کے عہدے پر بھی فائز رہے..

1 Comment
  1. فیضان says

    لعنت اللہ علیہ
    یہ لعنتی قادیانی تھا
    اور ہمارے پیارے پاکستان کو گالیاں دیتا تھا
    وہ پاکستانی کیسے ہو سکتا ہے جو پاکستان کو گالیاں نکالے ؟
    وہ پاکستانی کیسے ہو سکتا ہے جو پاکستان کے ایٹمی پروگرام کا راز فاش کر دے ؟
    اس لعنتی پر 1 بار نہیں لاکھ بار لعنت ہو
    اس کے کالے الفاظ آج بھی پاکستان کی تاریخ کا سیاہ باب ہیں
    جب بھٹو صاحب اس کو روکنا چاہتے تھے اس وقت اس لعنتی نے بکواس کی تھی ( میں اس ملک اور اس ملک کے ائین و قانون پر لعنت بھیجتا ہوں جو مجھے کافر قرار دے )
    اور پھر پاکستان کا جوہری پروگرام کا راز امریکہ کو دے کر امریکہ کی نیشنیلٹی لے لی تھی

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: