ڈی ائی جی مردان یاسین فاروق چارسدہ دورے کے موقع پر پولیس افسران سے خطاب کر رہے ہیں۔

پولیس افسران کی ایمانداری 100 فیصد ہونی چاہیے سفارشی نظام کا خاتمہ کیا جائے گا۔یاسین فاروق کی پولیس افسران سے خطاب

ڈی آئی جی مردان ریجن یاسین فاروق کا ضلع چارسدہ کا دورہ۔

پولیس افسران کی ایمانداری 100 فیصد ہونی چاہیے سفارشی نظام کا خاتمہ کیا جائے گا۔یاسین فاروق کی پولیس افسران سے خطاب

چارسدہ (نمائندہ سمیع اللہ)گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق ڈی آئی جی مردان ریجن یاسین فاروق کا ضلع چارسدہ کا دورہ ۔پولیس افسران کی ایمانداری 100فیصد ہونی چاہئے، سفارشی نظام کا خاتمہ کیا جائے گا،کسی کے ساتھ کوئی زیادتی نہیں ہوگی، پولیس افسران کی بہترین کاکردگی پر حوصلہ افزائی جبکہ غفلت برتنے پر حوصلہ شکنی کی جائے گی ، ضلع کو منشیات آئس جیسے مکروہ دھندے سے پاک اور سمگلروں کو کسی بھی حال پر نہ چھوڑا جائے ۔ کرائم کنٹرول کے لئے روزانہ کی بنیاد پر سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کریں ، ایف آئی آر کا اندراج مظلوم کا حق ہے ، پولیس اہلکاروں کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔ ڈی آئی جی مردان ریجن یاسین فاروق خان کا دورے کے موقع پر پولیس افسران سے خطاب گلوبل ٹائمز میڈیا تفصیلات کے مطابق ڈی آئی جی مردان ریجن یاسین فاروق نے ضلع چارسدہ کا دورہ کیا، دورے کے موقع پرڈی پی او چارسدہ زیب اللہ خان اور ایس پی انوسٹی گیشن سجاد خان نے پولیس دستے کے ہمراہ سلامی پیش کی۔ اس موقع پر چارسدہ کے تمام ایس ڈی پی اوز صاحبان اورایس ایچ اوزکے علاوہ دیگر افسران بھی موجود تھے، ڈی آئی جی مردان ریجن یاسین فاروق نے تعارفی میٹنگ میں افسران سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پولیس افسران کی ایمانداری کو پسند کیا جائے گا سفارشی نظام کا خاتمہ کیا جائے گا اور کسی بھی پولیس آفیسر کی سفارش یا کرپشن قابل برداشت نہیں ہوگی ،کسی بھی آفیسر کا کوئی ذاتی مسئلہ ہو تو سفارش کے بغیر بلا جھجک آکر مجھ سے مل سکتا ان کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔پولیس افسران کی سزا اور جزا کا عمل جاری رہے گا بہترین کارکردگی پر پولیس افسران کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے انعامات سے نوازا جائے گا جبکہ غفلت کی صورت میں محکمانہ کاروائی کی جائے گی۔پولیس افسران کرائم کی صورتحال کے کنٹرول کے لئے روزانہ کی بنیاد پر سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کا انعقاد یقینی بنائے اور ضلع میں منشیا ت جیسے مکروہ دھندہ باالخصوص آئس کے خلاف کاروائی اورمنشیات سمگلروں کے خلاف باقاعدہ مہم کا آغاز کیا جائے۔تمام ایس ڈی پی اوز اور ایس ایچ اوز منشیات کے خاتمے میں اپنا کردار ادا کریں اور ہمارے آنے والے نسلوں کو منشیات جیسے لعنت بچائے۔ ڈی آئی جی مردان نے کہا کہ ضلع میں ایس ڈی پی اوز کا کردار انتہائی اہم ہے ، تمام ایس ڈی پی اوز اپنے اپنے تھانہ جات کے دورے کیا کریں اورتھانہ جات کی صورتحال کا باقاعدہ جائزہ لیا کریں۔ تھانہ جات کے سی سی ٹی وی کیمروں ،تھانہ میں صفائی و ستھرائی کامعائنہ کیا کریں اور حوالات میں ملزمان سے ملاقات کے بعدجانچ پڑتال کیا کریں۔حوالات میں بند ملزمان کی حقوق کا خیال رکھا جائے، ڈی آئی جی مردان نے پولیس افسران کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کی آمدورفت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے کوئی بھی افیسر یا اہلکار ملوث پایا گیا تو ان کے خلاف ایف آئی آر کا اندراج کیا جائے گا،ہوئی فائرنگ کے خلاف اپنے اپنے علاقہ میں کاروائی کا آغاز کریں ملوث عناصر کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔انہوں نے کہا کہ شہداءخیبر پختونخوا پولیس کی قربانیاں لازوال ہے ان کی قربانیوں کو کسی بھی حال میں فراموش نہیں کیا جائے گا۔ شہداءکی فیملی کا خیال رکھا جائے ان مسئلے مسائل سننے جائے اور حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے۔اس موقع پر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر چارسدہ زیب اللہ خان نے ڈی آئی جی مردان کی پالیسی پر عمل کرنے کی یقین دہانی کرائی اور ضلع چارسدہ کو امن کا گہوارہ بنانے کا عہد کیا،ڈی آئی جی مردان کو یقین دلایا گیا کہ ضلع چارسدہ کو منشیات، چوری ، ڈکیتی اور دیگر جرائم سے پاک کیا جائے گا اور ضلع سے جرائم پیشہ افراد کا صفایا کیا جائے گا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: