کے آپریشن کیلیے آئی خاتون کا مبینہ گینگ ریپ : ڈاکٹر اور عملہ گرفتار

ایک خاتون جو نجی اسپتال میں ٹانگ کے آپریشن کیلیے آئی تھی، مبینہ طور پر گینگ ریپ کا نشانہ بن گئی.پولیس نے تین ملزمان کو جمعے کی رات حراست میں لے لیا اور ہفتے کو مجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا اور پانچ روز کا ریمانڈ حاصل کرلیا.خاتون کا کہنا تھا کہ مجھے بے ہوش کرنے کے بعد اپریشن کے عملےنے میرے ساتھ جنسی زیادتی شروع کی. اس بیچ خاتون کو ہوش آیا تو اس نے یہ دیکھ کر چلانا شروع کردیا. شور سن کر باقی عملہ اپریشن تھیٹرمیں داخل ہوا اور ملزمان کو رنگے ہاتھوں دھر لیا.موقعے پر پولیس کو بلا لیا گیا اور پولیس نے تین ملزمان کو حراست میں لے لیا اور تھانے منتقل کردیا. البتہ ڈاکٹر کو پوچھ گجھ کے بعد جانے کی اجازت دے دی گئی.ڈاکٹر شعیب چانڈیو ، اور عملے کے ارکان عقیل بھٹو، توفیق لغاری اور علی نواز نریجو کے خلاف سچل پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر کروا دی گئی.ملزمان اور خاتون کے سیمپل لے لیے گئے ہیں اور اب لیبارٹری ٹیسٹ کی رپورٹ کاانتظار کیا جارہا ہے تاکہ آگے کاروائی بڑھائی جاسکے.

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: