فائیو جی ٹیکنالوجی کا خطرہ ایمریٹس نے امریکہ کے لیے پروازیں بند کردیں

فائیو جی ٹیکنالوجی کے  خطرناک اثرات کے خدشات پر امارات اور جاپان سمیت مختلف فضائی کمپنیوں نے امریکہ کے لیے پروازیں منسوخ کر دیں۔

ان ایئر لائنز میں ایئر انڈیا، اے این اے، جاپان ایئر لائنز اور ایمریٹس شامل ہیں جن کی انتظامیہ نے امریکہ کے سفر کے لیے شدید خدشات کے پیشِ نظر پروازیں منسوخ کی ہیں۔

امریکہ میں جیٹ بلیو، امریکن ایئر لائنز، ساؤتھ ویسٹ، یونائیٹڈ ڈیلٹا، یو پی ایس اور فیڈ ایکس اُن کمپنیوں میں شامل ہیں جنہوں نے خط لکھ کر خبردار کیا ہے کہ فائیو جی سی بینڈ ٹیکنالوجی کے ایئر لائنز کے آپریشنز پر منفی اثرات مرتب ہوں گے اور زبردست معاشی بحران پیدا ہو سکتا ہے۔

کمپنیوں کا کہنا ہے کہ 1100 پروازیں اور 1 لاکھ مسافروں کو روزانہ تاخیر اورپروازوں کی منسوخی جیسے مسائل کا سامنا ہو گا۔

اگرچہ امریکیوفاقی ادارہ برائے شہری ہوا بازی نے اعتراف کیا ہے کہ فائیو جی ٹیکنالوجی سے طیاروں کے اہم  نظام  متاثر ہو سکتے ہیں جن میں ریڈیو الٹی میٹرز شامل ہیں۔

تاہم ادارے نے امریکی طیاروں کے ایک بڑے گروپ کو فائیو جی کے سی بینڈ کی موجودگی کے باوجود پروازوں کی اجازت دی ہے۔

فضائی کمپنیوں کا کہنا ہے کہ ریڈیائی لہروں کی مداخلت کی وجہ سے پروازوں کو غیر معینہ مدت تک کے لیے بند کرنا پڑ سکتا ہے۔

imshehzadahmad@

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: